حالات کے سہمے ہوئے لوگوں کو بتادو
حالات بدل جاتے ہیں ٹھہرا نہیں کرتے




جس پر زہر بھی اثر نہ کرے
تنہائی اسے بھی مار دیتی ہے




ہم اس کی آس میں یوں بیٹھے ہیں
جیسے لاعلاج کو انتظار ہو موت کا




سسکتے ہوۓ ہاتھ چھُڑانا پڑتا ہے
کُچھ مُحبتیں تقدیر میں نہیں ہوتی




روح نے عشق کا فریب دیا
جسم کو جسم کی عداوت میں




بارش کی طرح کوئی برسات رہے مجھ پر
مٹِّی کی طرح میں بھی مہکتی چلی جاؤں




جی چاہے کی دنیا کی ہر ایک فکر بھلا کر
دل کی باتیں سناؤں تجھے میں پاس بٹھا کر




ہم نے نہ جانا زندگی کیا ہے
پر زندگی نے سکھا دیا ہم کیا ہے




جہاں سے ٹُوٹ جائے گا
وہیں سے جوڑ لیں گے دِل


Urdu Love Poetry for her




میں چاہوں بھی تو وہ الفاظ نہ لکھ پاؤں
جس میں بیاں ہو جاۓ کہ کتنی محبت ہے تم سے




کیوں ڈر سے بند کرتے ہو آ نکھیں
یقین کرو کوئی چومنے سے نہیں مرتا




سزا اس کو ملے یا رب سے
اسے پھر سے مہبت ہو جا ئے مجھ  سے




محسوس کر ہمیں خود میں
تیری سانسوں میں رہتے ہے ہم



عشق ہی عشق ہے جہاں دیکھو
سارے عالم میں بھر رہا ہے عشق




بس اک تم پہ ختم ہو جاتا ہے 
میرا غصہ بھی میرا پیار بھی 




تیرے بغیر سب ہوتا ہے 
بس گزارا نہیں ہوتا 




تمہارے ساتھ کا جب سے ملا ہے ساتھ مجھے 
ناجانے کیوں مجھے خود سے محبت ہونے لگی ہے 




اک رات وہ گیا تھا جہاں بات روک کے
اب تک رُکا ہوا ہوں وہی رات روک کے


2 line Urdu Poetry Romantic sms




میں نے خدا سے دولت مانگی کب ہے
بس دعا ہے فقط تو میرا نصیب رہنا




لال رنگ میں ملبوس ہے وہ شخص
لال رنگ کی قسمت سنور گئی ہوگی



کسی اور کی جگہ باقی نہیں ہے مجھ میں
میں تم سے شروع ہو کر تم پہ ہی ختم ہوتا ہوں




جانتے ہو سُکھ کیا ہے
تمہارا مجھے میری جان کہنا


Love poetry in Urdu for boyfriend




جو جینے کی وجہ ہے وہ بھی تیرا عشق
جو جینے نہیں دیتا ہے وہ بھی تیرا عشق




صاحب تمہیں معلوم نہیں اندازِ محبت
دل خود ہی جھک جاتا ہے جھکایا نہیں جاتا




محبت کیا ہے اہلِ علم جانیں
ہمیں عادت تمہاری ہو گئی ہے




بات بات پے مُسکراتے ہو کیوں بار بار؟
جان لینے کے طریقے تو اور بھی ہیں!




آج تمہارے لبوں کی نیت کر کے،
ایک خوبصورت گلاب چوما ہم نے!




اپنے دل سے نکالو تو مانوں،
یوں چھوڑ جانا تو کوئی کمال نہیں!


Love Poetry pics in Urdu




جیسے کوئی چھوڑ نہیں سکتا اپنا مذہب،
ایسا ہی کچھ عقیدہ رکھتے ہیں ہم تیرے لئے!




دیکھ ساقی کیسے بستا ھے عشق وجود میں۔۔۔!!
سلطنت میری ھے رگ رگ پہ حکومت یار کی۔۔۔!!




پھر یُوں ھوا کہ حسرتیں پیروں میں گِر پڑیں
پھر میں نے اِن کو روند کے قصّہ ختم کیا۔




کوئی تعویز ، کوئی آیت، کوئی جادو؟
مجھے عمر بھر اس کے ساتھ رہنا ہے




عدم وہ ملے میں نے جاں وار دی
بڑی مختصر ہے کہانی مری


Romantic Love poetry




جس قدر ان کو اے عدم دیکھا
اس قدر دیکھنے کی پیاس رہی




مِٹائے گا مجھ کو عدم کیا کوئی
محبت میرا سنگِ بنیاد ہے




یاد آتے ہیں مجھ کو آج پل پل جاناں
تیری آغوش میں گزرے ہوئے کل جاناں




تجھ سے کچھ مانگنے نہیں آیا
میرا مقصد فقط زیارت ہے



میرے ہاتھوں سے مہک آتی رہی ھے دن بھر
جب خوابوں میں تیرے بال سنوارے میں نے